بلوچستان میں اپوزیشن کا تھانہ میں آٹھویں روز بھی دھرنا جاری رہا، ڈیڈلاک برقرار

0
45

کوئٹہ: بلوچستان اسمبلی کے اپوزیشن ارکان کا بجلی روڈ تھانہ میں آٹھویں روز بھی دھرنا جاری رہا حکومت اور اپوزیشن کے درمیان مقدمہ واپس لینے کے معاملے پر ڈیڈلاک برقرار ہے۔

بلوچستان اسمبلی کے 17ارکان کے خلاف پولیس کی جانب سے بلوچستان اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کرنے کا مقدمہ درج کئے جانے کے بعد 16ارکان کی جانب سے بجلی روڈ تھانہ کوئٹہ میں گرفتاری دی گئی تاہم پولیس کی جانب سے انہیں گرفتار کرنے سے انکار کردیا گیا جس کے بعد ارکان اسمبلی کی جانب سے گزشتہ 8 روز سے بجلی روڈ تھانہ کوئٹہ میں دھرنا جاری ہے۔ اس موقع پر جمعیت علماء اسلام پاکستان کے رہنما مولانا محمد خان شیرانی سمیت سیاسی وقبائلی عمائد ین کی جانب سے بجلی روڈ تھانہ میں اپوزیشن ارکان سے ملاقات اور اظہاریکجہتی کیا گیا۔

 اپوزیشن ارکان اسمبلی کا موقف ہے کہ حکومت نے پانچ روز گرزنے کے باوجود مقدمہ واپس لینے کی اسپیکر کی رولنگ پر عملدآمد نہیں کیا حکومت قانون شکنی اور اسمبلی کی توقیر کو مجروح کرنے کی مرتکب ہورہی ہے انہوں نے کہا کہ جب تک حکومت مقدمہ واپس نہیں لیتی یا ہمیں گرفتار نہیں کرتی احتجاج جاری رہے گا جبکہ حکومت کی جانب سے مذاکرات کی ناکامی کے بعد سے پیر کو اپوزیشن سے کسی بھی قسم کا رابطہ نہیں کیا گیا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں