آزاد کشمیر الیکشن کی تازہ صورتحال

0
122

مظفرآباد: آزاد کشمیر میں انتخابی دنگل میں تمام پارٹیاں بشمول مسلم لیگ نون پی ٹی آئی اور پیپلز پارٹی اپنی اپنی انتخابی کارکردگی پر مطمئن ہیں ہیں کشمیر میں سب سے بڑے جلسے پاکستان مسلم لیگ نون کی لیڈر مریم نواز شریف نے کیے۔ عمران خان بھی جلسہ کی صدارت کرتے رہے بلاول بھٹو زرداری بھی جلسے منعقد کرتے رہے اور ہر پارٹی یہی دعویدار ہے کہ کشمیر اس کا ہے۔

آزاد کشمیر کی قانون ساز اسمبلی کی 45 نشستوں کے لیے پولنگ کا آغاز ہوگیا۔ آزاد کشمیر کی قانون ساز اسمبلی کے لیے ہونے والی پولنگ صبح 8 بجے شروع ہوئی جو شام 5 تک کسی وقفے کے بغیر جاری رہے گی۔

چیف الیکشن کمشنر عبد الرشید سلہریا نے ایل اے 21 پونچھ 4 کے پولنگ اسٹیشن نمبر 40 کا دورہ کیا، کوٹلی کے حلقہ ایل اے 12 چڑھوئی میں دو سیاسی جماعتوں کے کارکنان میں مسلح تصادم ہوا اور فائرنگ سے ایک شخص جاں بحق اور 3 زخمی ہوگئے۔

آزاد جموں و کشمیر قانون ساز اسمبلی کے انتخابات کے لیے کراچی، لاہور، گوجرانوالا، گجرات، سیالکوٹ، حافظ آباد اور نارووال میں بھی پولنگ ہو رہی ہے۔

 ڈپٹی کمشنر گوجرانوالہ گورنمنٹ ہائی اسکول نمبر 2 میں قائم پولنگ اسٹیشن پہنچے اور انہوں نے ن لیگ اور مسلم کانفرنس کے پولنگ ایجنٹوں کو باہر نکال دیا جس پر لیگی ایجنٹوں نے شدید احتجاج کیا۔۔ن لیگ کے پولنگ ایجنٹ اور ڈپٹی کمشنر میں تلخ کلامی بھی ہوئی جس کے باعث پولنگ روک دی گئی۔  واقعے کے فوری بعد ن لیگ کے امیدوار چوہدری اسماعیل گجر بھی پولنگ اسٹیشن پہنچ گئے۔

ڈپٹی کمشنر کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ پولنگ ایجنٹوں کو پولنگ روم سے نکالا تھا جبکہ ن لیگ کے پولنگ ایجنٹس کا مؤقف تھا کہ ڈپٹی کمشنر کمرے سے نکال کر دھاندلی کرانا چاہتے ہیں۔

مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما خرم دستگیر نے لیگی پولنگ ایجنٹ کو پولنگ اسٹیشن سے نکالنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے پولنگ ایجنٹس پرامن رہیں گے لیکن بیلٹ باکسز کے پاس رہیں گے۔

پولنگ میں 32 لاکھ سے زائد ووٹر حق رائے دہی استعمال کریں گے، پاکستان میں بسنے والے ساڑھے 4 لاکھ سے زائد کشمیری بھی ووٹ ڈالیں گے۔

آزاد کشمیر میں 33 انتخابی حلقوں میں 587 اور مہاجرین کے 12 انتخابی حلقوں میں 121 امیدوار مدمقابل ہیں۔

پولنگ کے موقع پر آزاد کشمیر میں سکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں، 40 ہزار پولیس اہلکار الیکشن ڈیوٹی انجام دے رہے ہیں جبکہ حساس پولنگ اسٹیشنز پر فوج تعینات کی گئی ہے۔

آزاد کشمیر کے 33 حلقوں میں 12 بڑے مقابلے متوقع ہیں، حلقہ ایل اے 29 مظفر آباد سے مسلسل دو بار منتخب ہونے والے ن لیگی امیدوار بیرسٹر افتخار علی گیلانی کا مقابلہ سینئر ترین پارلیمنٹیرین خواجہ فاروق سے ہو گا جو تحریک انصاف کے امیدوار ہیں۔

حلقہ ایل اے 32 میں وزیراعظم آزاد کشمیر راجا فاروق حیدر اور پیپلز پارٹی کے صاحبزادہ اشفاق ظفر مدمقابل ہیں جبکہ ایل اے 3 میں پی ٹی آئی آزاد کشمیر کے صدر اور سابق وزیراعظم بیرسٹر سلطان محمود چوہدری اور ن لیگی امیدوار چوہدری سعید آمنے سامنے ہیں۔

ایل اے 15 باغ ٹو سے پی ٹی آئی کے سردار تنویر الیاس خان اور مسلم لیگ ن کے مشتاق منہاس میدان میں ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں